دنیا کے مختلف حصوں میں نئے سال کا استقبال کرنے کے لیے مختلف روایتیں اور کہانیاں آج بھی زندہ

دنیا کے مختلف حصوں میں نئے سال کا استقبال کرنے کے لیے مختلف روایتیں اور کہانیاں آج بھی زندہ

زرد زیریں لباس پہنیں، جھاڑو ہر گز نہ لگائیں، کپڑے نہ دھوئیں، دنیا کے مختلف حصوں میں نئے سال کا استقبال کرنے کے لیے مختلف روایتیں اور کہانیاں آج بھی زندہ ہیں۔دنیا کے مختلف حصوں میں نئے سال سے جڑی دلچسپ روایات کا حقیقت سے کوئی تعلق ہو یا نہ ہو لیکن لوگ آج بھی ان کو اپنائے ہوئے ہیں۔کولمبیا میں ان روایات سے جڑے ملبوسات پر زبردست سیل لگی ہے، زرد رنگ کے زیریں لباس کی دھڑا دھڑ بکری جاری ہے، مانا جاتا ہے کہ سال کے آغاز پر انہیں پہننے سے قسمت بھی روشن ہونے کے امکانات ہیں۔کولمبیا میں ایک اور دلچسپ تصور یہ ہے کہ نئے سال کی آمد کے موقع پر دالیں جیب میں ڈال لی جائیں تو سارا سال جیب بھاری رہے گی۔دنیا کے کچھ حصوں میں یہ بھی عام تصور ہے کہ نئے سال پر دروازہ کھلا رکھنے سے قسمت کی دیوی کو اندر آنے میں دشواری نہیں ہوتی ۔کچھ تو یہ بھی کہتے ہیں کہ اس موقع پر جھاڑو لگائی تو سمجھو قسمت پر ہی جھاڑو نہ پھر جائے، اسی طرح نئے سال کے موقع پر کپڑوں کی دھلائی بھی نہ کی جائے۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*