سابقہ حکومتیں پہلے سو دن عیاشیاں کرتی تھیں : فیاض الحسن چوہان

سابقہ حکومتیں پہلے سو دن عیاشیاں کرتی تھیں : فیاض الحسن چوہان

وزیر اطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان کا کہنا ہے کہ ملک کی سابقہ حکومتوں کا پہلے سو دن ہنی مون ہی ختم نہیں ہوتا تھا، یہ لوگ بمعہ اہل و عیال عیاشیاں کرتے تھے۔

لاہور میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے فیاض الحسن چوہان نے کہا کہ کرپٹ حکمرانوں نے اپنا نام اٹھارویں اورانیسویں ترمیم رکھ لیا ہے، یہ لوگ تیتراور بٹیر لڑتے تھے اور اب احتساب کر رہے ہیں تو بانہوں میں بانہیں ڈال لی ہیں۔

فیاض چوہان کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی میں بھی جو کرپٹ اور بد دیانت ہیں ان کو بھی نشان عبرت بنائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ حرام کا پیسہ نہ ہوتا تو ان کو کوئی گھر میں چپڑاسی نہ رکھے، ہمارا پیسہ کھا کر ان کے چہرے پر لالیاں آگئی ہیں، میرا سچ چور اور چوروں کے حواریوں کو بھی چبھے گا۔

فیاض چوہان نے بتایا کہ تھیٹر کو فحاشی اور عریانی سے پاک کرنا چاہیں تو بھی تنقید کی جاتی ہے، بسنت منانے کا اعلان کریں تو بھی مسئلہ نہ کریں تو بھی ایشو بن جاتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہمارا ایمان ہے کہ سیرت نبی پر چل کر کسی ایٹمی طاقت سے ڈرنے کی ضرورت نہیں، اسلام غلامی کیلئے نہیں بلکہ دنیا پر غالب آنے کے لئے آیا تھا،مسلمان کسی ڈونلڈ ٹرمپ یا اوباما کی غلامی کیلئے نہیں آئے ہیں۔

فیاض الحسن چوہان نے کہا کہ پارلیمنٹ ہاؤس کی راہ داری میں باؤجی کی کانہ پھوسی ہوئی تھی، باوجی نے کہا زرداری تو بچ کے رئیں گلاں وچ نہ آئیں۔انہوں نے مزید کہا کہ جب باؤ جی سے کرسی گئی تو یہ مائیکل جیکسن کی طرح ناچتا تھا۔

وزیر اطلاعات پنجاب کا کہنا تھا کہ ایک زمانہ میں انکی سیاست تیتر بٹیرکی سی تھی جن کی چونچ اور دم الگ ہوگئی، ، اب انکو اکٹھے ایک جیل میں رکھیں گے۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*