شاعرہ پروین شاکرکو دنیا سے بچھڑے 24 برس بیت گئے

شاعرہ پروین شاکرکو دنیا سے بچھڑے 24 برس بیت گئے

کراچی: اپنی شاعری کے ذریعے خوابوں، خوشبوؤں اور نوجوانوں کے دلوں کی ترجمانی کرنے والی شاعرہ پروین شاکر کو دنیا سے بچھڑے 24 برس بیت گئے۔
نوجوانوں کی زندہ دل شاعرہ پروین شاکر نے 24 نومبر 1952 میں کراچی میں ادبی خاندان میں آنکھ کھولی جس کی وجہ سے وہ اپنے گھر میں ہی کئی شعراء کے کلام سے روشناس ہوئیں، انہوں نے جامعہ کراچی سے انگریزی ادب میں ایم اے کی ڈگری حاصل کی اور پی ایچ ڈی کرنے کے بعد درس و تدریس کے شعبہ سے وابستہ ہوگئیں۔ تاہم 9 سال بعد ہی شعبہ تدریس کو خیرباد کہتے ہوئے انہوں نے سرکاری ملازمت اختیار کرلی اور ساتھ ساتھ وہ ریڈیو پاکستان کے مختلف علمی ادبی پروگراموں میں شرکت کرتی رہیں۔
خوابوں اور خوشبوؤں کی شاعرہ نے انتہائی کم عمری میں ہی شعر گوئی شروع کردی تھی۔ انہوں نے اپنی منفرد شاعری کی پہلی کتاب ’’خوشبو‘‘ سے اندرون و بیرون ملک بے پناہ مقبولیت حاصل کی اور آدم جی ایوارڈ اپنے نام کیا۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*