مشال قتل کیس کا ایک اور ملزم گرفتار، تعداد 58 ہوگئی

مشال قتل کیس کا ایک اور ملزم گرفتار، تعداد 58 ہوگئی

مردان: مشال قتل کیس کے ایک اور ملزم کو گرفتار کرلیا گیا جس کے بعد زیرحراست ملزمان کی تعداد 58 ہوگئی۔

ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر مردان میاں سعید کے مطابق مشال قتل کیس کے ملزم اظہار عرف جونی کو مردان کے علاقے صدر سے گرفتار کیا گیا جب کہ ملزم گزشتہ 8 ماہ سے پولیس کو مطلوب تھا۔

ڈی پی او کے مطابق ملزم اظہار کے قبضے سے کلاشنکوف، کلاکوف اور ایک پستول بھی برآمد ہوئی ہے جس سے مزید تفتیش کی جارہی ہے۔

ڈی پی او مردان میاں سعید کے مطابق مشال قتل کیس میں مجموعی ملزمان کی تعداد 61 ہے جن میں سے 58 کو گرفتار کرلیا گیا ہے اور اب بھی 3 ملزمان مفرور ہیں جن کی گرفتاری کے لئے کوششیں کی جارہی ہیں۔

مشال خان قتل کیس میں 57 ملزمان پر فرد جرم عائد

خیال رہے کہ گزشتہ سال 13 اپریل کو مردان کی عبدالولی خان یونیورسٹی کے طالبعلم مشال خان کو ایک مشتعل ہجوم نے تشدد اور فائرنگ کرکے قتل کر دیا تھا۔

مقتول مشال خان پر الزام عائد کیا گیا کہ انہوں نے مبینہ طور مذہب کی توہین کی لیکن مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کی تفتیش کے دوران ایسے کوئی شواہد سامنے نہیں آئے۔

مشال قتل کیس ہری پور کی انسداد دہشت گردی کی عدالت میں زیرسماعت ہے اور عدالت زیرحراست 57 ملزمان پر فرد جرم عائد کرچکی ہے۔

واضح رہےکہ مشال خان کے والد اقبال خان نے سیکیورٹی وجوہات کی بنا پر کیس کو ایبٹ آباد منتقل کرنے کی درخواست کی تھی جس میں انہوں نے پشاور یا مردان میں جان کو خطرے کا خدشہ ظاہر کیا تھا اور دھمکیاں ملنے کا بھی بتایا تھا۔

اقبال خان کی درخواست پر پشاور ہائیکورٹ نے 27 جولائی کو مقدمے کو ہری پور منتقل کرنے کا حکم دیا تھا۔

Comments are closed.