پاکستان کے 4نو جوان ترکی میں انسانی اسمگلرز کی قید میں

پاکستان کے 4نو جوان ترکی میں انسانی اسمگلرز کی قید میں

گوجرانوالہ کے چار نوجوانوں کے اہل خانہ کا کہنا ہے کہ  ان کے بچوں کو ترکی میں انسانی اسمگلرز نے قید کرلیا ہےاور بچوں کو چھوڑنے کے فی کس 20 لاکھ روپے مانگے ہیں۔گوجرانوالہ کے علاقے گھوڑے شاہ کےچار نوجوان ایجنٹوں کے ذریعے یونان کے لیے نکلے تھے تاہم طے شدہ رقم نہ ملنے پر ترکی میں انسانی اسمگلرز نے انہیں قید کرلیا۔دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ ترکی میں پاکستانی نوجوانوں کا معاملہ ترک حکام کے ساتھ اٹھایا ہے، نوجوانوں کی واپسی کیلئے ہرممکن اقدامات کیے جا رہے ہیں۔ان چار نوجوانوں کے اہلخانہ کا کہنا ہے کہ انسانی اسمگلرز ان کے بچوں پر تشدد بھی کررہے ہیں۔ انسانی اسمگلرزکی طرف سے بھیجی گئی ویڈیو میں بھی نوجوانوں کو رقم بھیجنے کی اپیل کرتے دکھایا گیاہے۔ ادھر ڈپٹی ڈائریکٹر ایف آئی اے خالد انیس کہتےہیں جب تک نوجوانوں کے اہلخانہ کوئی درخواست نہیں دیتے کارروائی نہیں کی جاسکتی۔ دوسری جانب دفتر خارجہ کاکہناہےکہ حکومت پاکستان ترکی میں پاکستانی نوجوانوں کے اغو برائے تاوان سےمتعلق میڈیا رپورٹس سے آگاہ ہے، انقرہ اور استنبول میں پاکستان کے سفارتی مشنز معاملے پر ضروری اقدامات کررہےہیں، ترک حکام کی جانب سے بھی مکمل تعاون کیا جا رہا ہے۔ مسئلے کے حل کےلیے معاملے کی مزید تفصیلات حاصل کی جا رہی ہیں۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*