اسرائیل نے مقبوضہ فلسطینی علاقے میں 5 سونئے یہودی گھروں تعمیرکرنے کا منصوبہ بحال کردیا

اسرائیل نے مقبوضہ فلسطینی علاقے میں 5 سونئے یہودی گھروں تعمیرکرنے کا منصوبہ بحال کردیا

اسرائیل نے مقبوضہ فلسطینی علاقے میں 5 سونئے یہودی گھروں تعمیرکرنے کا منصوبہ بحال کردیا، اقوام متحدہ کا اظہار تشویش۔خبرایجنسی کے مطابق اسرائیل نے مشرقی یروشلم میں پانچ سو نئے یہودی گھروں کی تعمیرکا اعلان کیا ہے، امریکا میں ڈونلڈ ٹرمپ کے صدر منتخب ہونے کےبعد اسرائیل کا نئی یہودی بستیوں کی تعمیر کا یہ پہلا منصوبہ ہے۔ اسرائیلی حکام کے مطابق یہ منصوبہ 2014 سے زیر التوا تھا۔نئی یہودی بستی کی تعمیر پر اقوام متحدہ نے شدید تشویش کا اظہار کیا ہے۔ اقوام متحدہ کے مندوب نکولے ملادنوف نے سلامتی کونسل کو بتایا کہ اسرائیل اقدام کے بعد مشرق وسطی میں صورتحال تیزی سے تبدیل ہورہی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ اس سے فلسطینی ریاست کو وہ خطرات لاحق ہورہے ہیں جو پہلے کبھی نہیں دیکھے گئے۔ انہوں نے سلامتی کونسل پر زور دیا کہ وہ اسرائیل کو نئی یہودی بستیوں کی تعمیر سے روکے۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*