امریکا میں الیکشن فراڈ کے کوئی شواہد نہیں ،وائٹ ہاؤس

امریکا میں الیکشن فراڈ کے کوئی شواہد نہیں ،وائٹ ہاؤس

نو منتخب امریکی صدر ٹرمپ کی جانب سے انتخابات میں دھاندلی کے الزامات پر وائٹ ہاؤس کا کہنا ہے کہ امریکا میں الیکشن فراڈ کے کوئی شواہد نہیں ۔وائٹ ہاؤس کے ترجمان جوش ارنیسٹ نے بریفنگ میں ٹرمپ کی جانب سے ریاست ورجینیا ۔۔ نیو ہمشائر اور کیلی فورنیا میں بدترین دھاندلی کے الزامات کی تردید کی ہے۔ انھوں نے کہا کہ ٹرمپ نے اپنے الزامات کے جواب میں کسی قسم کے شواہد اور ثبوت پیش نہیں کیے ہیں ۔سیاسی تجزیہ نگاروں اور انتخابی مبصرین نے بھی دھاندلی کے حوالے سے ٹرمپ کے بیان کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ وسیع پیمانے پر دھاندلی کے کوئی شواہد نہیں ملے ہیں ۔ ٹرمپ نے اتوار کو کہا تھا کہ ورجینیا،نیوہیمپشائر اور کیلی فورنیا میں بدترین دھاندلی ہوئی ہے اور اگر غیرقانونی ووٹنگ نہ ہوتی توپاپولر ووٹ بھی وہی جیتتے ۔جوش ارنیسٹ نے یہ بھی بتایا کہ صدر اوباما نے ڈونلڈ ٹرمپ سے ہفتے کے روز ٹیلی فون پر رابطہ کیا ۔ تاہم کیا بات ہوئی ۔اس سلسلے میںتفصیلات بتانے سے گریز کیا ۔جوش ارنیسٹ نے کہاکہ ہ کیوبا کے فیدل کاسترو کے انتقال کے باوجود امریکا اور کیوبیا کے درمیان تعلقات کی بحالی کا عمل سست نہیں پڑے گا ۔تاہم صدر اوباما آنجہانی رہنما کی آخری رسومات میں شرکت نہیں کریں گے ۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*