جاپان اور بھارت کے درمیان ایٹمی توانائی کا معاہدہ

جاپان اور بھارت کے درمیان ایٹمی توانائی کا معاہدہ

جاپان اور بھارت کے درمیان ایٹمی توانائی کا معاہدہ جاپان کے وزیراعظم اور بھارتی ہم منصب نریندر مودی نے ایٹمی توانائی معاہدے پر دستخط کردیئے، جبکہ شنزو اے بے کا کہنا ہے کہ نئی دہلی جوہری توانائی کا پرامن اور ذمہ دارانہ استعمال کرے گا۔ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی نے جاپان کے دورے کے دوران ٹوکیو میں جاپانی ہم منصب شنزو اے بے سے ملاقات کی۔ ملاقات کے بعد مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے جاپان کے وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ جاپان دنیا کو ایٹمی ہتھیاروں سے پاک کرنے کی کوشش کی حمایت کرتاہے اور بھارت کا پرامن استعمال کیلئے ایٹمی توانائی ری ایکٹر دینا جاپان کی پرامن ایٹمی پالیسی کا حصہ ہے۔ انکا کہنا ہے کہ توقع ہے بھارت اسے ذمہ داری کے ساتھ اور پرامن مقاصد کیلئے استعمال کرے گا۔واضح رہے کہ جاپان نے معاہدے میں یہ شرط رکھی ہے کہ ایٹمی توانائی کا توانائی کے علاوہ دیگر مقاصد کیلئے استعمال نہیں کیا جائےگا۔ اس کے علاوہ دونوں ممالک نے تجارت کے معاہدوں پر دستخط کیے ہیں۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*