جنوبی کوریا کی صدر پارک گیون نے با لاآخر اپنے منصب کو چھوڑنے کا فیصلہ کر لیا

جنوبی کوریا کی صدر پارک گیون نے با لاآخر اپنے منصب کو چھوڑنے کا فیصلہ کر لیا

پارک گیون ہائی نے کہا ہے کہ جیسے ہی پارلیمان محفوظ انتقال اقدار کا کوئی لائحہ عمل تیار کر لے گی تو وہ اپنے منصب سے مستعفی ہو جائیں گی۔جنوبی کوریا کی صدر پارک گیون ہائی نے کہا ہے کہ جیسے ہی پارلیمان محفوظ انتقال اقدار کا کوئی لائحہ عمل تیار کر لے گی تو وہ اپنے منصب سے مستعفی ہو جائیں گی۔جنوبی کوریا کی صدر کی طرف سے یہ حیران کن اعلان منگل کو سامنے آیا، واضح رہے کہ اُن کی حکومت کے خلاف بڑے پیمانے پر مظاہرے کیے گئے جن میں اُن سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کیا گیا۔ ۔صدر پارک گیون ہائی اس سے قبل منصب چھوڑنے کے مطالبات کو رد کرتی رہی ہیں۔پارک گیون ہائی پر الزام ہے کہ اُن کی ایک قریبی دوست چوئی سون سل اربوں ڈالر بدعنوانی میں ملوث پائی گئیں اور اس سے جنوبی کوریا کی صدر کی شخصیت کو ایک دھچکا لگا اور وہ تیزی سے تنہا ہوتی جا رہی ہیں۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*