دنیا بھر میں 300ملین بچے شدید فضائی آلودگی والے علاقوں میں رہائش پذیر ہیں

دنیا بھر میں 300ملین بچے شدید فضائی آلودگی والے علاقوں میں رہائش پذیر ہیں

بین الاقوامی ادارے یونیسف کی رپورٹ کے مطابق دینا بھر میں300ملین بچے ایسے علاقوں میں رہائش اختیار کئے ہوئے ہیں، جہاں فضائی آلودگی بین الاقوامی قوانین سے 6گُنا زیادہ ہے۔ بین الاقوامی فضائی آلودگی کے جائزے کے لیے یونیسف نے سٹیلائٹ کے ذریعے ان تمام علاقوں کا سروے کیا جہا ں دینا بھر کے 90%بچے رہتے ہیں، ان کی تعداد دو ارب کے لگ بھگ ہے۔ جائزے کے بعد یہ سامنے آئی ہے ان تمام علاقوں میں فضائی آلودگی ورلڈ ہیلتھ آرگنائزئشن کی مقرر کردہ حد سے زیادہ ہیں۔یونیسف نے وارننگ جاری کی فضائی آلودگی کے باعث ہر سال چھ لاکھ بچے انتقال کر جاتے ہیں اور یہ صورت حال نہایت خطرناک حالات کی نشاندہی کر رہی ہے۔ یہ تعداد ملیریا اور ایڈز کی وجہ سے مرنے والوں سے دوگنا ہے۔یونیسف کے ڈائریکٹر انتھونی لیک نے کہا ہے،دنیا کا کوئی معاشرہ فضائی آلودگی کو فراموش نہیں کر سکتا، ہمیں اپنے بچوں کو بچانا ہے اور یہ اُسی صورت ممکن ہے جب ہم اپنی فضا کو پہتر بنانے کے لیے کام کریں ۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*