سمبا حملہ کے لئے حملہ آوروں کی جانب سےسرنگ استعمال کرنے کا دعویٰ، بھارت

سمبا حملہ کے لئے حملہ آوروں کی جانب سےسرنگ استعمال کرنے کا دعویٰ، بھارت

بھارت نے اپنی کمزوری چھپاتے ہوئے سمبا حملہ کے لئے حملہ آوروں کی جانب سےسرنگ استعمال کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔بی ایس ایف کا کہنا ہے کہ اس نے جموں کی بین الاقوامی سرحد کے80 میٹر لمبی سرنگ دریافت کی ہےجو 2فٹ چوڑی اور 2فٹ اونچی ہے۔بھارتی سیکورٹی فورس کے ڈائریکٹر جنرل کے کے شرما نے نئی دلی میں صحافیوں کو بتایا کہ ہوسکتا ہے کہ یہ سرنگ منگل کو سمبا سیکٹر میں مارے جانے والے تین خود کش بمباروں نے استعمال کی ہو۔انہوں نے کہا کہ یہ نہیں کہا جاسکتا کہ اس سرنگ کی ابتدا پاکستان میں ہوئی ہے۔ منگل کو حملہ آوروں اور بی ایس ایف کے درمیان جھڑپ اسی وقت ہوئی ،جب خود کش حملہ آوروں نے نگروٹاکے فوجی کیمپ پر حملہ کیا تھا۔کے کے شرمانے کہا کہ حملہ آور سرنگ سے رینگ کرعلاقے میں داخل ہوئے۔ انہوں نے کہا کہ علاقے میں سرحد میں کوئی شگاف نہیں تھا۔سرنگ اس جگہ ملی ہے ،جہاں کاشتکاری ہوتی ہے اور زمین نرم ہے۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*