مصر نے اپنی کرنسی کی قدر میں اڑتالیس فی صد کمی کردی

مصر نے اپنی کرنسی کی قدر میں اڑتالیس فی صد کمی کردی

مصر نے اپنی کرنسی کی قدر میں اڑتالیس فی صد کمی کردی ہے۔مصر نے یہ آئی ایم ایف کے مطالبے پر کیا ہے تاکہ اس سے آیندہ تین سال کے دوران ملک کی بیمار معیشت کو سنبھالا دینے کے لیے بارہ ارب ڈالرز کا قرضہ حاصل کیا جا سکے۔کرنسی کی قدر میں کمی کے بعد اب ایک ڈالر تیرہ مصری پاؤنڈ کا ہوگیا ہے۔اس سے پہلے سرکاری مارکیٹ میں ایک ڈالر کی قیمت قریباً نو پاؤنڈ تھی،البتہ گزشتہ ہفتے بلیک مارکیٹ میں ایک ڈالر اٹھارہ مصری پاؤنڈ تک بکتا رہا ہے۔مصری پاؤنڈ کی قیمت میں کمی کے بعد اب روزمرہ استعمال کی اشیاء کی قیمتوں میں اضافہ ہوجائے گا اور اس سے صدر عبدالفتاح السیسی کی حکومت پر دباؤ میں مزید اضافہ ہو سکتا ہے۔صدر السیسی حالیہ ہفتوں کے دوران متعدد مرتبہ مصریوں پر یہ زور دے چکے ہیں کہ وہ ملک کو درپیش بدترین اقتصادی بحران سے نمٹنے کے لیے ان کا ساتھ دیں۔ان کے بقول مصری ضبط وتحمل سے کام لیں۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*