میانمار:روہنگیا مسلمان ریاستی جبر کا شکار ،کئی خواتین بے آبرو

میانمار:روہنگیا مسلمان ریاستی جبر کا شکار ،کئی خواتین بے آبرو

میانمار میں روہنگیامسلمان نسل کشی کا شکا رہیں،پر تشدد واقعات،قتل ،زیادتی اور اپنے گھر جلائے جانے کے بعد ہزاروں روہنگیا مسلمان بے سروسامانی کی حالت میں بنگلا دیش کی سرحد کے ساتھ پناہ گزین کیمپوں میں موجود ہیں ، یہاں موجود کئی خواتین کو فوجی جوانوں نے بے آبرو کیا ،10 سال یا اس سے زائد عمر کے مردوں کو گولیاں ماری گئیں۔برما سےپناہ گزین کیمپوں تک کے مشکل سفر میں کئی لوگ اپنے پیاروں سے بچھڑگئے ،بنگلادیش میں اقوام متحدہ کے ادارہ برائے مہاجرین کے مطابق ایسا معلوم ہوتا ہے کہ فوج روہنگیا مسلمانوں کی نسل ختم کرنا چاہتی ہے۔میانمار میں روہنگیامسلمانوں کے خلاف ریاستی فوج کے مظالم پر امن کا نوبل انعام لینےوالی آن سان سوچی کی حکومت کو عالمی تنقید کا سامنا ہے ، ریاستی حکومت کے ہاتھوں مظالم کے خلاف امریکی میڈیا بھی بول پڑا ہے۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*