پاناما لیکس کیس ، سپریم کورٹ نے فریقین سے تمام دستاویزات طلب کر لیں

پاناما لیکس کیس ، سپریم کورٹ نے فریقین سے تمام دستاویزات طلب کر لیں

سپریم کورٹ نے وزیر اعظم کے وکیل کو جائیداد کی تفصیلات اور دستاویزات پندرہ نومبر تک جمع کرانے کا حکم دیدیا ، عدالت نے فریقین کو الزامات سے متعلق دستاویزات بھی پیش کرنے کا حکم دیا ۔سپریم کورٹ میں پاناما لیکس کے خلاف درخواستوں پر سماعت ہوئی ۔ سماعت کے دوران چیف جسٹس انور ظہیر جمالی نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ ایک راستہ تو یہ ہے کہ ہم کمیشن بنا دیں، دوسرا یہ ہے کہ کمیشن کا ابھی انتظار کریں فریقین کو تمام دستاویزات پیش کرنے کا کہیں تاکہ معاملہ کمیشن کو بھجوائیں تو کمیشن کو کوئی مسئلہ نہ ہو ۔سماعت کے دوران جسٹس آصف سعید کھوسہ اور حکومتی وکیل سلمان اسلم بٹ کے درمیان دلچسپ مکالمہ بھی ہوا ۔ حکومتی وکیل سلمان بٹ نے کہا کہ جس رکن قومی اسمبلی کا نام بھی آف شور کمپنی میں ہے اس کا معاملہ بھی کمیشن کو بھجوایا جائے ، چاہتے ہیں سب کا برابری کی بنیاد پر احتساب ہو،جسٹس آصف سعید کھوسہ نے کہا کہ یہ نہ ہو کہ ملک لیڈر شپ سے خالی ہو جائے ۔ حکومتی وکیل نے جواب دیا کہ ملک لیڈر شپ سے خالی ہوتا ہے تو ہو جائے ۔جسٹس عظمت سعید نے کہا کہ عدالت کسی بھی متعلقہ شخص کی دستاویزات طلب کر سکتی ہے ، عدالت نے پندرہ نومبر تک تمام دستاویزات جمع کرنے کا حکم دیا اور سماعت ملتوی کر دی ۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*