ڈونلڈ ٹرمپ کی جیت کو عالمی مارکیٹوں نے قبول کرنا شروع کردیا منفی رجحان بدلنے لگا

ڈونلڈ ٹرمپ کی جیت کو عالمی مارکیٹوں نے قبول کرنا شروع کردیا منفی رجحان بدلنے لگا

ڈونلڈ ٹرمپ کی جیت کو عالمی مارکیٹوں نے قبول کرنا شروع کردیا، تبادلہ اور اسٹاک مارکیٹ کا منفی رجحان آہستہ آہستہ بدلنے لگا ہے، سونے کی خریداری کا رجحان بھی تبدیل ہوگیا۔ٹرمپ کی کامیابی کی خبر پر دنیا بھر کی اسٹاک مارکیٹوں میں بھونچال آگیا تھا، امریکا، برطانیہ، جاپان، ہانگ کانگ، کراچی اور ممبئی اسٹاک مارکیٹس میں شدید مندی دیکھنے میں آئی، ڈالر کی قدر کم ہوگئی اورسونا مہنگا ہوگیا۔تاہم اب مارکیٹ کا منفی رجحان بدلنے لگا ہے، پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں کاروبار مثبت رجحان پر اختتام پذیر ہوا، 100انڈیکس90 پوائنٹس اضافےسے42 ہزار203 کی سطح پر بند ہوا۔امریکی صدارتی انتخابات کے دوران ڈونلڈ ٹرمپ جیسے جیسے جیت کے قریب ہورہے تھے عالمی اسٹاک ایکس چینجز گر رہی تھیں، ٹوکیو، ہانگ کانگ، بھارت، پاکستان، برطانیہ، فرانس، جرمنی اوردیگر یورپی مارکیٹس منفی رجحان میں رہیں لیکن ٹرمپ کی جیت کے اعلان کے بعد مارکیٹس نے اپنا رجحان بدلنا شروع کردیا۔ٹرمپ کی جیت کے اعلان سے پہلےجاپان کی نکئی 919 پوائنٹس جبکہ ہینگ سینگ 494 پوائنٹس کم ہو کر بند ہوچکی تھیں، پاکستان اسٹاک ایکسچینج کا 100 انڈیکس ٹرمپ کی جیت سے پہلے 700 پوائنٹس جبکہ ممبئ کا سینسیکس 1000 پوائنٹس کمی کا شکار تھا،ٹرمپ کی جیت کے بعد یہ نقصان بالترتیب 52 اور 300 پوائنٹس رہ گیا۔یورپ کی اسٹاک مارکیٹس میں لندن کا فٹ سی، پیرس کا کیکرون اورفرینکفرٹ کا ڈیکس ٹرمپ کی جیت پر پلٹ گئے۔عالمی تبادلہ مارکیٹ میں نتیجہ آنے سے پہلے ڈالر کی فروخت جبکہ یورو، اسٹرلنگ اور ین کی خریداری کا رجحان تھا، فیصلے کے بعد یہ رجحان بھی تبدیل ہوا ہے۔ٹرمپ کی جیت سے پہلے سونے کو سرمایہ محفوظ کرنے کے لیے خریدا گیا، جس سے سونے کی قیمت میں 52 ڈالر فی اونس تک اضافہ ریکارڈ کیا گیا جو اب 24 ڈالر فی اونس باقی رہ گیا ہے۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*