سعودی عرب دھماکوں سے گونج اٹھا، 6اہلکار شہید

ریاض(7نیوز) سعودی عرب میں ایک ہی دن میں 4 دھماکے ہوئے۔ ایک دھماکہ اذان مغرب سے ایک منٹ قبل اور دوسرا بعد میں پیش آیا۔ دھماکے وقت پولیس اہلکاروں کی بڑی تعداد افطاری کرنے میں مصروف تھی ۔ پہلا دھماکہ جدہ میں امریکی قونصلیٹ جنرل کے سامنے ہوا جس کے نتیجے میں 2پولیس اہلکار شہید ہوگئے۔ دوسرا قطیف شہر مسجد کے قریب ہوا، تیسرا اور چوتھا دھماکہ مدینہ منورہ میں ہوا۔ مدینہ منورہ میں ہونے والے دونوں دھماکے کے خودکش تھے۔ دھماکوں میں متعدد افراد کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں ۔ عرب ذرائع ابلاغ کے مطابق جدہ سکیورٹی اہلکاروں کے روکنے پر خودکش بمبار نے خود کو دھماکے سے اڑا دیا۔ جدہ میں رونما ہونے والا خودکش دھماکہ امریکی قونصل خانے کے قریب 2بجکر 15 منٹ پر ہوا۔ اطلاعات کے مطابق میجر جنرل منصور الترکی نے بتایا کہ حملہ آور کی عمر 30 سال تھی ۔ مدینہ منورہ میں شارٹ سرکٹ کے باعث آتشزدگی اور خوف و ہراس پھیل گیا۔ خبر ایجنسی نے بتایا کہ خودکش بمبار مسجد فراج العمران کو نشانہ بناناچاہتے تھے۔ سعودی حکام کے مطابق قطیف میں دھماکے کے باعث 6اہلکار شہید جبکہ پانچ اہلکار زخمی ہوئے اورمتعدد گاڑیوں کو نقصان پہنچا۔ قطیف سکیورٹی اداروں نے علاقے کو گھیر ے میں لے لیا، دھماکے کی جگہ سے دھویں کے بادل چھا گئے۔ میجر جنرل منصور الترکی نے کہا کہ جدہ میں ہونے والا دھماکہ ہسپتال کی پارکنگ میں ہوا ۔ حملہ آور نے مسجد کے قریب خودکو دھماکے سے اڑا یا۔ دو دھماکے مدینہ منورہ میں جنت البقیع کے قریب عدالتوں کے قریب ہوئے۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*