چلی کی جیت ،میسی کی ریٹائر منٹ

چلی کی جیت ،میسی کی ریٹائر منٹ

تحریر :عارف جمیل

فیفا کے قیام کے ساتھ ہی جنوبی امریکہ کے10 ممالک نے ایک اہم قدم اُٹھاتے ہوئے 19ِجولائی1916ءکو ” کونمیں بول” (سابقہ نام) یعنی ساﺅتھ امریکن فُٹ بال کنفیڈریشن کے قیام کا اعلان کرتے ہوئے ایک گورننگ باڈی کے تحت فُٹ بال کے مقابلوں کا انعقاد کروانا شروع کر دیا۔
وقت گزرتا رہا اور فیفا کے زیر ِنگرانی رُکن ممالک ارجنٹائن ، چلی، کولمبیا ، پیراگوئے ، برازیل ، ایکواڈور، پیرو ،یوروگوائے،وینزویلا اور بولیویا کے درمیان شاندار مقابلے ہو تے رہے اور فُٹ بال کے شائقین کی تعداد میں اضافہ ہو تا چلا گیا۔حالیہ کوپا امریکا کپ میں سب سے بڑا ٹاکرا چلی اور ارجنٹائن کے درمیان ہوا۔ چلی اور ارجنٹائن کی ٹیمیں جب گراﺅنڈ میں داخل ہوئیں تو اسٹیڈیم شائقین سے بھراہو اتھا اور آغاز میں ہی دونوں طر ف سے بہت جوش نظر آیا۔ مقصد تھا پہلا گول؟پہلا ہاف وزورں پر رہا اور ارجنٹائن بھاری نظر آیا کیونکہ چلی نے 10فاﺅل کیئے اور 1ریڈ کارڈ کا سامنا بھی کیا۔ کورنر دونوں کو ایک ایک ملے۔دوسرے ہاف میں مقابلہ کانٹے دار لگا چھا یا پھر بھی ارجنٹائن ہی رہا کیونکہ ارجنٹائن کو 7مزید کورنر ملے جبکہ چلی کو 3۔ لیکن گول پھر کوئی ٹیم نہ کر سکی اور اسطرح اضافی ٹائم میں بھی دونوں ممالک کے درمیان مقابلہ برابر رہا اور اسٹیڈیم میں تماشائیوں کا جوش و خروش اعصاب شکن کی شکل اختیار کر گیا۔ پینلٹی شوٹ کا مرحلہ آیا تو پہلی چلی سے ضائع ہو گئی اور دوسری ارجنٹائن کے میسی سے ۔پھر چلی نے اگلی چار پر 4گول کر دیئے جبکہ ارجنٹائن کی 8ویں کک ضائق ہو چکی تھی۔لہذا چلی پینلٹی شوٹز پر2-4سے کوپا امریکہ کپ کا دوسری دفعہ مسلسل فاتح بھی قرار پا گیا اور اپنے ٹائٹل کا دفاع بھی کر گیا۔ چلی کے شائقین نے خوشی میں بہت نعرے لگائے اور اُنکے اپنے ملک میں جشن کا سماں قائم ہو گیا۔ ارجنٹائن فُٹ بال ٹیم کے میسی اہم کھلاڑی ہیں جنہیں 5مرتبہ سال کا بہترین کھلاڑی ہونے کا اعزاز حاصل ہو چکا ہے نے24ِجون 2016کو جب کوپا امریکہ ٹورنامنٹ کے دوران اپنی 29ویں سالگرہ منائی تو وہاں کے شائقین اُنکے سحر میں نظر آئے۔جسکی وجہ اارجنٹائن کی سیمی فائنل میں رسائی تک اُنکی بہترین کارکردگی رہی۔ میسی کی ایونٹ میں خاص طور پر پاناما کے خلاف 19منٹ میں ہیٹرک، بولیویا کے خلاف اُنکے گول کیپر کی ٹانگوں کے درمیان میں سے بال کو کک مار کر گول کرنااور پھر سیمی فائنل میں یوایس اے کی سر ِزمین پر کم وبیش 70ہزار شائقین کے درمیان شاندار کھیل اور ایک ناقابل ِفراموش فری ہٹ سے گول کر دینا وہاں کے شائقین پر سکتہ طاری کر گیا۔اُس گول کے بعد وہ ارجنٹائن کی طرف سے اب تک کُل 55 انٹرنیشنل گول کرنے والے پہلے کھلاڑی بن گئے ۔اس سے پہلے ارجنٹائن کے گیبریل بیٹس ٹوٹاکا زیادہ گول کرنے کا ریکارڈ تھا۔
بہرحال فائنل میں میسی نے کھیل تو ایک دفعہ پھر اچھا پیش کیا لیکن چلی کے خلاف مقابلہ برابر رہنے پر جب پینلٹی شوٹز پر فیصلہ ہونا قرارپایا تو میسی سے پینلٹی کک ضائع ہو گئی جس کا دُکھ اُس کے چہرے پر ارجنٹائن کی شکست کے بعد واضح تھاکیونکہ وہ جانتا تھا کہ فی الوقت ارجنٹائن کو بڑی فتح کیلئے ایک نیا انتظار کرنا پڑے گالیکن اُس میںاب اس شکست کے بعد سکت نہیں کے وہ مستقبل میں ارجنٹائن کیلئے بین الاقومی سطح پر فُٹ بال کے مقابلوں میں حصہ لے سکے ۔ لہذا اگلے چند لمحوں میں 29سالہ لیونل میسی نے ریٹائر منٹ کا اعلان کر دیا۔ ارجنٹائن کے صدر مور یسیومکری اور لیجنڈ کھلاری میرا ڈونا نے میسی سے اپیل کی ہے کہ وہ ریٹائر منٹ کا فیصلہ واپس لیکر 2018ءمیں ہونے والے ورلڈ کپ میں کامیابی کیلئے کوشاں ہو جائیں۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*