کم سن ملازمہ پر تشدد، چیف جسٹس کا ازخود نوٹس لے لیا

کم سن ملازمہ پر تشدد، چیف جسٹس کا ازخود نوٹس لے لیا

چیف جسٹس سپریم کورٹ جسٹس ثاقب نثار نے جوڈیشل افسر کے گھر میں کم سن ملازمہ پر تشدد کا ازخود نوٹس لیتے ہوئے رجسٹرار اسلام آباد ہائیکورٹ سے آئندہ 24گھنٹے میں رپورٹ طلب کرلی ۔میڈیا رپورٹ کے مطابق بچی کو تشدد کے بعد جلانے کی کوشش کی گئی تھی۔معاملے کو سمجھوتے کے بعد دبادینے کا سپریم کورٹ نے نوٹس لے لیا۔واضح رہے کہگھریلو ملازمہ طیبہ کے والدنے مقدمے کو بے بنیاد قرار دے کر راضی نامہ کر لیا تھا،عدالت نے ایڈیشنل سیشن جج کی اہلیہ کی 30ہزار روپے کے مچلکوں کے عوض ضمانت منظورکرلی تھی۔بچی نے مجسٹریٹ کو بیان میں بتایا تھا کہ اس پر تشدد ہوتا ، کھانا نہیں دیا جاتا تھا، ٹینکی کےساتھ اندھیرے کمرے میں سلادیاجاتا تھا۔بچی نے بتایا تھا کہ جھاڑو گم ہونے پر اسے مار پڑی تھی، مالکن نے ہاتھ جلتے چولہے پر رکھے تھے اور چائے بنانے والی ڈوئی سیدھے منہ پر دےماری تھی، جس کے نشانات ننھی طیبہ کے جسم پر واضح تھے۔بچی نے بیان میں کہا تھا کہ دو سال سے جج راجا خرم علی خان کے گھر کام کرتی ہے مگر اس دوران والدین ملنے نہیں آئے۔ صرف باہر ہی باہر پیسے لے لیتے تھے۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*