امریکا کا مستقبل محفوظ ہاتھوں میں ہے،صدر اوباما

امریکا کا مستقبل محفوظ ہاتھوں میں ہے،صدر اوباما

امریکی صدر براک اوباما نے کہاہے کہ امریکا کا مستقبل آٹھ سال پہلے کی نسبت بہتر اور محفوظ ہاتھوں میںہے ۔اقتدار کی پرامن منتقلی امریکی جمہوریت کی علامت ہے۔شمالی امریکا کے علاقے شکاگو کے سب سے بڑے کنونشن سینٹر مک کورمک پلیس میں صدر اوباما نے الوداعی خطاب کیا، صدرکا خطاب سننے کے لئے20 ہزار کےقریب لوگ موجودتھے۔ 2012 کے صدارتی انتخاب میں مٹ رومنی کو شکست دینے کے بعدبھی باراک اوباما نے یہاں خطاب کیاتھا۔انہوںنے اپنی انتظامیہ کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ اقتدار کی پرامن منتقلی امریکی جمہوریت کی علامت ہے،تاہم انہوں نے خبردار کیا کہ جمہوریت کو ہلکا نہیں لینا چاہئے۔انہوں نے مختلف پس منظر سے تعلق رکھنے والے امریکیوں سے کہا کہ ایک دوسرے کے نقطۂ نظر کو سمجھنے کی کوشش کریں کیونکہ،ہمیں اوروں پرتوجہ دینی اور انہیں سننا ہے۔امریکی صدر نے کہا کہ نسل پرستی نےہمارے ملک کو ماضی میں تباہ کیا،مسئلہ آج بھی ہے ۔ تارکین وطن کےبچوں پرتوجہ نہیں دی گئی تویہ امریکی بچوں سےبھی زیادتی ہوگی۔اوباما اہلیہ اوربیٹیوں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے جذباتی ہو گئے اور کہا کہ وہ وائٹ ہاؤس سے خطاب کرنے کی بجائے وہیں جانا چاہتے تھے جہاں سے ان کے اور خاتون اول مشیل اوباما کے لیے یہ سب شروع ہوا تھا ۔انہوں نے کہا کہ امریکا کے پہلے سیاہ فام صدر جن کی عمر اس وقت 55 برس ہے پہلی مرتبہ 2008 میں امید اور تبدیلی کے وعدوں پر منتخب ہوئے تھے۔ انہوںنے 2008 میں منتخب ہونے کے بعد پہلا خطاب بھی شکاگو میں ہی کیا تھا۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*