ٹرمپ انتظامیہ پاکستان کے مسائل جانتی ہے، جلیل عباس جیلانی

ٹرمپ انتظامیہ پاکستان کے مسائل جانتی ہے، جلیل عباس جیلانی

امریکا میں پاکستانی سفیر جلیل عباس جیلانی کہتے ہیں ٹرمپ انتظامیہ پاکستان کے مسائل جانتی ہے۔ ایف16 طیاروں کی فراہمی اور اتحادی سپورٹس فنڈ پر نظر ثانی سے دہشت گردی کے خلاف جاری جنگ میں مدد ملے گی۔انھوں نے امید ظاہر کی کہ ٹرمپ انتظامیہ کی جانب سے ایف16 لڑاکا طیاروں کے معاملے پر غور کیا جائے گا، تو فیصلہ پاکستان کے حق میں جائے گا۔انھوں نے کہا کہ ٹرمپ انتظامیہ میں جس طرح کے لوگوں کی تقرری ہو رہی ہے اس سے انھیں کافی امیدیں ہیں۔ پاکستان نے سندھ طاس معاہدے پر غیر جانبدار ماہر کے تقرر کی بھارتی درخواست رد کر دیا اور کہا ایسے ماہر کا مینڈیٹ محدود ہوگا۔ غیر جانبدار تکنیکی اور قانونی ماہرین پر مشتمل ٹیم ہونی چاہیے۔واشنگٹن میں پاکستانی سفارتخانے میں امریکی پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا کے اعزاز میں تقریب میں بات کرتے ہوئے پاکستانی سفیر جلیل عباس جیلانی نے کہا کہ سبکدوش ہونے والی اوباما انتظامیہ کے ساتھ پاکستان کے مضبوط تعلقات تھے۔نئی امریکی انتظامیہ جانتی ہے کہ پاکستان کو کن مسائل کا سامنا ہے۔ انھوں نے امید ظاہر کی کہ ایف16 طیاروں کی فراہمی اور اتحادی سپورٹس فنڈ جیسے اشوز پر نظر ثانی کی جائے گی۔ جس سے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں مدد ملے گی اور پاک امریکا تعلقات مزید مستحکم ہوں گے۔انھوں نے کہا کہ سندھ طاس معاہدے پر ورلڈ بینک اپنا انتظامی کردار ادا کرے۔ بھارت نے سندھ طاس معاہدے پر غیر جانبدار ماہر کی درخواست کی ہے مگر پاکستان سمجھتا ہے کہ غیر جانبدار ماہر کا مینڈیٹ محدود ہوگا۔اس کی بجائے غیر جانبدار تکنیکی اور قانونی ماہرین پر مشتمل ٹیم ہونی چاہیے۔ پاکستان بھارت کے ساتھ بامعنی مذاکرات کا خواہش مند ہے۔ پاکستان میں داعش کا کوئی منظم نیٹ ورک موجود نہیں، افغانستان میں داعش کے بڑھتے ہوئے اثرو رسوخ پر تشویش ہے۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*